in

مائیکرو ارگنزم اور مختلف بیماریوں سے بچانے والی 5 صحت مند غذائیں Five Best Foods that fight against Microorganism

اس آرٹیکل میں ہم آپ کو 5 ایسی صحت مند غذاؤں کے متعلق بتائیں گے جو ایسے مائیکرو ارگنزم سے بچاتی ہیں جو انسانی صحت کیلئے مضر اثرات پیدا کرتے ہیں اللّٰہ تعالیٰ نے جہاں انسان کیلیے بیماری پیدا کی ہے وہاں اس کیلئے اپنی بنائی ہوئی چیزوں میں شفا بھی رکھی ہے قرآن میں ارشادِ ربانی ہے کہ
“ہم نے تمہارے لیے پاک چیزیں حلال کی ہیں”
اس سے یہ واضح ہوتا ہے کہ اللّٰہ نے اپنی پاک چیزیں حلال کی ہیں اور ان میں شفا بھی رکھی ہے
جس طرح آج کل کرونا وائرس کے حوالے سے لوگوں میں بہت تشویش اور پریشانی پائی جاتی ہے اصل میں یہ بیماری اللّٰہ کی طرف بھیجی گئی ایک آزمائش ہے کہ وہ کس طرح اپنی ایک چھوٹی سی مخلوق سے لوگوں میں ڈر اور خوف پیدا کر سکتا ہے جو خود کو ناقابل تسخیر سمجھتے ہیں۔

آج کل کرونا وائرس کے بارے میں لوگوں کے ذہنوں میں بہت غلط قسم کے نظریات پائے جاتے ہیں لوگ عام نزلہ زکام کو بھی کرونا سمجھنے کی غلطی کر رہے ہیں ایسے میں جہاں ہر شخص پریشان دکھائی دےرہا ہے وہاں اگر ہم خالق کائنات کی پیدا کی ہوئی پاک اور حلال چیزوں پر غور کریں تو ہمارے اردگرد ایسی غذائیں موجود ہیں جن کو استعمال کر کے ہم کسی بھی قسم کے وائرس سے بچ سکتے ہیں ان میں سے ہم پانچ کا ذکر یہاں کریں گے۔

لہسن Garlic

لہسن قدرت کا ایک ذائقہ دار تحفہ ہے اس کا استعمال صحت پر انتہائی مفید اثرات مرتب کرتا ہے لہسن اگر کھانے میں شامل نہ ہو تو کھانے کا مزہ دوبالا نہیں کیا جا سکتا۔لہسن میں قدرت کی طرف سے بے شمار فوائد موجود ہیں جن کی مدد سے ہم نہ صرف وائرس سے بلکہ اور بھی بہت سی بیماریوں سے بھی بچ سکتے ہیں ویسے تو لہسن بیشتر پاکستانی کھانوں میں استعمال ہوتا ہے لیکن کافی افراد کو اس جڑی بوٹی نما سبزی کے بیشتر طبعی فوائد کا علم نہیں۔ لہسن میں موجود ایلیسین مرکب ہمیں وائرل انفیکشنز اور دیگر بہت سی بیماریوں سے بھی بچاتا ہے اور لہسن کھانے سے خون میں کولیسٹرول کی سطح کم ہوتی ہےاور فشار خون میں کمی آتی ہے۔ لہسن کھانے سے جسم میں ہائڈروجن سلفائیڈ کی فراہمی بڑھ جاتی ہے یہی وجہ ہے کہ لہسن کے استعمال سے کئی قسم کے وائرس اور سرطان سے محفوظ رہنے میں مدد ملتی ہے لہسن آنتوں میں پائے جانے والے بیکٹریا کو توڑ کر زکام اور انفلوئنزا سے محفوظ رکھتا ہے اور ہاضمہ درست کرنے میں بہت مفید ہے اور معدے کیلئے قوت بخش ہے۔ دمہ کی صورت میں یہ سینے کو طاقت دیتا ہے، لہسن کا اچار بھی بہت لذیذ ہوتا ہے نہار منہ کچا لہسن کھانے سے دل کے امراض پیدا نہیں ہوتے۔ ماہرین کا کہنا ہےکہ لہسن کا روز مرہ استعمال جسم کو تندرستی و توانائی بخشتا ہے اور لہسن وٹامن بی اور سی حاصل کرنے کا ذریعہ ہے اور یہ شوگر کو بھی کنٹرول کرتا ہے۔

لہسن Garlic

پالک Spinach

اس میں ہم آپ کو اک اہم سبزی پالک کے فائدے اور اس کی افادیت کے بارے میں بتائیں گے ی سبز پتوں والی سبزی ہے جس کو سب لوگ پسند کرتے ہیں اور پاکستان میں یہ بہت شوق سے پکائی اور کھائی جاتی ہے۔ پالک میں وٹامن اے, کے، ای، منرل زنک، میگنیشیم، آئرن، کیلشیم اور فائبر کی کافی مقدار پائی جاتی ہے اور یہ تمام اجزاء انسانی صحت کے لیے بہت ضروری ہیں یہ آنکھوں کیلئے بھی بہت مفید ہےاس میں پائے جانے والے بہترین بیٹا کیروٹین ، لیوٹین اور زنتھین سے بھرپور پالک آنکھوں کیلئے بہت فائدہ مند ہے یہ ہمیں آنکھوں کی خارش ، آنکھوں کے السر، اور آنکھوں کے خشک ہونے سے بچاتی ہے۔ پالک بلڈ پریشر کو نارمل رکھنے میں بھی مدد دیتی ہے یہ بلڈ پریشر کے مریضوں کے لیے بہت مفید ہے کیوں کہ اس میں پوٹاشیم کی مقدار زیادہ ہوتی ہے اور سوڈیم کم مقدار میں موجود ہوتا ہے پالک کینسر کے مریضوں کیلئے بھی بہت مفید ہے پالک متعدد قسم کے کینسر مثلاً مثانے ، جگر ، پھپھڑے، وغیرہ کے کینسر سے بچاتے ہیں پالک میں موجود فائٹو نیوٹرینٹس، اور پگمنٹس جلد کو سورج کی شعاعوں اور الٹرا وائلٹ شعاعوں سے بچاتے ہیں اور متاثرہ جلد کی حفاظت بھی کرتے ہیں پالک میں موجود اگزیلک ایسڈ ہمیں وائرس اور انفیکشنز سے بچاتا ہے ہم پالک کو مختلف طریقوں سے پکاتے ہیں پالک پنیر ، مرغ پالک، میتھی اور ساگ کے ساتھ ملا کر بنا سکتے ہیں بہت سے لوگ پالک کو مفید نہیں سمجھتے شاید اسی لیے اسے سبزیوں میں کم اہمیت کم دی جاتی ہے لیکن اس مضمون کو پرھنے کے بعد اس کی افادیت سے واقف ہو جائیں گے پالک کی یہ بھی اک خصوصیت ہے کہ یہ سارا سال مارکیٹ میں موجود ہوتی ہیں آج کل رمضان میں اس کے پکوڑے بہت مزے کے بنتے ہیں پالک کو اچھی طرح سے صاف کر کے پکانا چاہیے۔

پالک Spinach

ہلدی Turmeric

برصغیر میں شاید ہی کوئی گھر ایسا ہو جہاں ہلدی استعمال نہ ہوتی ہو مغرب کی جدید تحقیق بھی اب ہلدی کی افادیت کو تسلیم کرتی ہے۔ نیویارک کے ناردن ویسٹ چیسٹر ہاسپٹل میں میڈیسن کی ڈائریکٹر ڈاکٹر منرو سانتوس ان مریضوں کو جو جوڑوں میں درد اور سوزش کی شکایت کرتے ہیں ان کو اکثر و بیشتر ہلدی استعمال کرنے کی تجویز پیش کرتی ہیں یہ اپنے خوب صورت رنگ اور اعلی ذائقے کی وجہ بہت اہمیت کی حامل ہے مشہور کہاوت ہے کہ جس شہر میں زیتون ، ہلدی، السی، اور کلونجی میسر ہوں وہاں ڈاکٹر کا کوئی کام نہیں۔ ہلدی قدرتی اجزاء سے بھرپور ہے ہلدی کے بغیر ہر قسم کے پکوان نا مکمل ہوتے ہیں۔اس کے بغیر کھانا بے رنگ لگتا ہے ہلدی کے بے شمار فوائد ہیں اس کا استعمال مختلف بیماریوں سے بچاتا ہے مثلا دماغی امراض، ذیابیطس، الرجی جوڑوں کا درد ، انفیکشنز اور وائرس وغیرہ ۔ ہلدی میں قدرتی طور پرجراثیم کش خوبیاں پائی جاتی ہیں یہ خراشوں، زخموں ، اور جلنے وغیرہ کے لئے مفید اور فوری مرہم کا کام کرتی ہے۔اسکا با قاعدگی سے استعمال کولیسٹرول کو کنٹرول کرتا ہے اور دماغ کی سوجن کو کم کرنے میں بہت مفید ہے۔ ہلدی امراض قلب کو روکنے میں بھی مفید ثابت ہوتی ہے ہلدی سکن کی خوبصورتی کے لیئے کافی مفید ھی عورتیں اس کا ابٹن بنا کر چہرے پر لگاتی ہیں ۔ ہلدی طاقتور اینٹی آکسائیڈنٹ اور جراثیم کش مصالحہ ہے جو مختلف انفیکشنز سے بچاتا ہے اور اس کی روک تھام کا سبب بنتا ہے ہلدی میں موجود پولی فینول ایسا اینٹی آکسائیڈنٹ ہے جو کہ ورم کش خصوصیات رکھتا ہے۔ ہلدی جوڑوں کے درد ،سوجن ، اکڑن میں کمی لانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

ہلدی Turmeric

سبز چائے۔ Green Tea

سبز چائے سینکڑوں برسوں سے اپنے تمام تر فوائد کے ساتھ استعمال کی جا رہی ہے روانہ ایک کپ سبز چائے کا آپ کو بے شمار فائدے دیتا ہے۔ تمام آکسیڈنٹ فراہم کرتا ہے کیونکہ اس میں اینٹی آکسیڈنٹ پائے جاتے ہیں۔ یہ میٹا بولزم کو بڑھا کر چربی جلانے کا عمل تیز کرتا ہے اور اس کے علاوہ جوڑوں کے درداور ہڈیوں کی سوزش کو ٹھیک کرنے کے لیے مفید ثابت ہو سکتا ہے۔ امریکا کی واشنگٹن سٹیٹ یونیورسٹی میں ایک طبی تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ وزن کم کرنے کے ساتھ ساتھ سبز چائے کے اور بھی بہت سے فوائد ہیں۔ سبز چائے میں دار چینی اور شہد استعمال ہوتا ہے جوکہ بہت فائدہ مند ہے یہ کولیسٹرول کو کم کرتی ہے اور دل کے مریض افراد کیلئے بہت مفید ہے۔ معدہ اور ہڈیوں کے کینسر کو ختم کرنے کے لیے بہت اہم کردار ادا کرتی ہے یہ مختلف قسم کے وائرس اور انفیکشنز سے بچاتی ہے۔

سبز چائے۔ Green Tea

کھٹے رس دار پھل۔ Citrus Fruits

مالٹا پاکستان میں کثرت سے پیدا ہوتا اور اسی تناسب سے استعمال بھی ہوتا ہے۔ یہ تمام عمر کے لوگوں کے لیے یکساں مفید ہے۔مالٹے کے کیمیائی اجزاء میں سٹرک ایسڈ اور وٹامن سی بکثرت ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ معدنی نمک مثلاً کیلشیئم، میگنیشیئم، پوٹاشیئم، فولاد، تانبا اور فاسفورس بھی ہو تے ہیں۔مالٹے وٹامن سی سے بھرپور ہوتے ہیں آگر یہ روزانہ استعمال کیے جائیں تو آپ کے مدافعتی نظام کو مضبوط کر دیتے ہیں۔ جس کی وجہ سے آپ بیماریوں سے محفوظ رہتے ہیں۔انسان کی عمر جیسے جیسے بڑھتی ہے اسکی جلد بھی ڈھلنا شروع ہو جاتی ہے۔ مالٹوں میں وٹامن سی اور اینٹی آکسیڈینٹ پائے جاتے ہیں۔ جو انسانی جلد کے لئے بہت مفید ہوتے ہیں۔ اگر آپ روزانہ کی بنیاد پر مالٹے کھاتے ہیں تو آپ اپنی عمر سے کم نظر آئیں گے اور ساتھ ساتھ آپ کا سست پن ختم ھو جاتا ھے۔ما لٹے فائبر سے بھرپور ہوتے ہیں اور فائبر انسانی معدے کے لیے انتہائی اہم ہے۔ آپ کو اگر قبض یا معدے کا السر کی پریشانی ہو تو مالٹے کھانے سے یہ بہتر ہو جاتا ہے۔مالٹے میں شوگر کم ہوتی ہے اس لیے زیابیطس کے مریضوں کے علاوہ موٹے لوگ بھی اس کو استعمال کریں تو ان بیماریوں کو کنٹرول کر سکتے ہیں

Citrus Fruits

نتیجہ Conclusion

یاد رکھیں ، اس سے قطع نظر کہ آپ دنیا کے لئے کیا کررہے صحت ہے تو سب کچھ ہے اور جب صحت غائب ہے تو ، دانائی خود کو ظاہر نہیں کر سکتی ، آرٹ ظاہر نہیں ہوسکتا ، طاقت کا استعمال نہیں ہوسکتا ، دولت بیکار ہے اور اسی لیئے احتیاط علاج سے بہتر ہے۔

 2,396 

2 Comments

Leave a Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Written by Food Science News

فوڈ سیفٹی کیوں ضروری ہے؟ (Why Food Safety is Important)

Prevent from Hazard ہیزرڈ

ہیزرڈ، پی آر پی،اوپریشنل آرپی، ہیسپ Hazard, OPRPs and HACCP